Poetry / General

Muzammil Shahzad

Aao Chalein

Aao Chalein
Tanhaaiyon Ke Safar Pe
Hum
Jahan Manzilein Hain
Na Raaste
Duriyan Hain Na Faasle
Jahan Koi Bhi Be'wafa Nahi
Jahan Dard-o-Ghum
Jaata Nahi
Jahan Pyaar Hai Na
Qasam Koi
Iqraar Hai na Bharam Koi
Jahan Dil Koi Jalta Nahi
Be'Maut Koi Marta Nahi
Aao Chalo Mere Saath Tum
Mere Humsafar
Mere Khwaab Tum
Aao Chalo Mere Saath Tum

· 1 Like · Feb 26, 2016 at 11:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

Ajeeb Ek Fasana Hai

~* Wo Baagh Ki Sair Ka Qissa Bhi *~
~* Ajeeb Ek Fasana Hai *~
~* Ek Phool Ko Daik Ke Aisa Laga *~
~* Jaisay Wo Kissi Ka Saaya Hai *~
~* Phir Bhait Ke Usko Daikthay Rehna *~
~* Kaha Dil Walon Ka Shaiwa Hai *~
~* Dil Ne Kaha Ke Choo Loon Unko *~
~* Phir Mann Mera Ghabra Sa Gaya *~
~* Aakhir Haath Bada Ke Mein Ne *~
~* Choo Liya Ek Pankhrri Ko *~
~* Mein Bhool Gaya Phir Duniya Ko *~
~* Buss Aankhon Mein Tasveer Bani *~
~* Phir Un Pankhrion Ko Ginthay Rehna *~
~* Ye Bhi Alag Ek Zindagi Thee *~

· 1 Like · Feb 26, 2016 at 05:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

Parinda

Wo Parinda Jo Pair Pe Tanha Betha Tha
Jane Kis Soch Mein Doba Kya Kuch Soch Raha Tha
Duniya Ki Soch Se Mawara
Logoun Ki Bheer Se Aalag Thalag
Tanhai K Shano Pe Sar Rakh Ker
Aur Raat Ki Tanhai Ko Apne Uper Urh Ker
Chand Ko Apna Dost Banaye Jane Kya Kuch Bata Raha Tha
Lafzon K Jal Mein Ulajh Ker Wo
Kabhi Kehta Kabhi Rukta Kabhi Hans Deta
Kabhi Monh Chupaye Chanda Se Dhere Dhere Ro Deta
Dekh K Us Ko Laga Youn Mujhe
Shayed . . .
Ye Bhi Ek Qaidi Ho Her Raat Ki Tanhai Ka.

· 1 Like · Feb 25, 2016 at 15:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

کیا خبر تھی

کیا خبر تھی میں اس درجہ بدل جاوّں گا
تجھ کو کھو دوں گا تیرے غم سے سمبھل جاوں گا
اجنبی بن کے ملوں گا میں تجھے محفل میں
تونے چھیڑی بھی تو میں بات بدل جاوں گا
ڈھونڈ پائے نہ جہاں یاد بھی تیری مجھ کو
ایسے جنگل میں کسی روز نکل جاوں گا
ضد میں آئے ہوے معصوم سے بچے کی طرح
خود ہی کشتی کو ڈبونے پہ مچل جاوں گا

· 1 Like · Feb 25, 2016 at 03:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

کھلی جو آنکھ

کھلی جو آنکھ تو وہ تھا نہ وہ زمانہ تھا
دہکتی آگ تھی تنہائی تھی فسانہ تھا
غموں نے بانٹ لیا مجھے یوں آپس میں
کہ جیسے میں کوئی لُوٹا ہوا خزانہ تھا
یہ کیا کہ چند ہی قدموں پہ تھک کے بیٹھ گئے
تمہیں تو ساتھ میرا دورتک نبھانا تھا
مجھے جو میرے لہو میں ڈّبو کے گذرا ہے
وہ کوئی غیر نہیں یار اک پرانا تھا
خود اپنے ہاتھ سے 'شہزاد' اُس کو کاٹ دیا
کہ جس درخت کی ٹہنی پہ آشیانہ تھا

· 1 Like · Feb 24, 2016 at 20:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

زندگی کس ڈگر پہ چلتی ہے

زندگی کس ڈگر پہ چلتی ہے
نت نئے راستے بدلتی ہے

تشنگی بجھ رہی ہے کھیتوں کی
برف کہسار پر پگھلتی ہے

میرا چہرہ جھلس گیا کیسے!
آگ تو میرے دل میں جلتی ہے

دھیرے دھیرے اُبھر رہا ہے چاند
روشنی پاؤں پاؤں چلتی ہے

· 1 Like · Feb 24, 2016 at 14:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

زندگی کس ڈگر پہ چلتی ہے

زندگی کس ڈگر پہ چلتی ہے
نت نئے راستے بدلتی ہے

تشنگی بجھ رہی ہے کھیتوں کی
برف کہسار پر پگھلتی ہے

میرا چہرہ جھلس گیا کیسے!
آگ تو میرے دل میں جلتی ہے

دھیرے دھیرے اُبھر رہا ہے چاند
روشنی پاؤں پاؤں چلتی ہے

· 1 Like · Feb 24, 2016 at 08:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

نوجوان محنت کش کا نغمہ

دن بھر کی محنت سے تھک کر
شام کوجب گھر جاتا ہوں
افسردہ دہلیز کو اپنا رستہ
تکتا پاتا ہوں
اپنی تھکن کی میلی چادر
آنگن کی رسی پہ ڈال کے
پھر باہر آجاتا ہوں
رات گئے تک بازاروں میں
اپنا جی بہلاتا ہوں
چمپا کے ہاروں سے
اپنی دنیا کو مہکاتا ہوں
آوارہ کہلاتا ہوں

· 2 Like · Feb 24, 2016 at 02:02
Category: general
 
Poetry / General

Muzammil Shahzad

پرکھنا مت

پرکھنا مت پرکھنے میں کوئی اپنا نہیں رہتا
کسی بھی آئینے میں دیر تک چہرہ نہیں رہتا
ہزارون شعر میرے سو گئے کاغذ کی قبروں میں
عجب ماں ہوں کوئی بچہ میرا زندہ نہیں رہتا
بڑے لوگوں سے ملنے میں ہمیشہ فاصلہ رکھنا
جہاں دریا سمندر سے ملا دریا نہیں رہتا
تمہارا شہر تو بالکل نئے انداز والا ہے
ہمارے شہر میں بھی اب کوئی ہم سا نہیں رہتا
کوئی بادل نئے موسم کا پھر اعلان کرتا ہے
خزاں کے باغ میں جب ایک بھی پتا نہیں رہتا
محبت ایک خشبو ہے ہمیشہ ساتھ رہتی ہے
کوئی انسان تنہائی میں بھی تنہا نہیں رہتا

· 1 Like · Feb 23, 2016 at 07:02
Category: general
 
Giant Comb Bike Rack.
Posted by sana dimple
Posted on : Dec 06, 2015

Random Post

New Pages at Social Wall

New Profiles at Social Wall

Connect with us


Facebook

Twitter

Google +

RSS